Connect with us

خبریں

ہنزہ کریم آباد میں ڈپٹی کمشنر کی جانب سے کھلی کچہری منعقد

رحیم امان

Published

on

(رحیم امان ، رحیم اللہ بیگ) ) کریم آباد ہنزہ میں سید علی اصغر ڈپٹی کمشنر ضلع ہنزہ کی جانب سے منعقدہ کھلی کچہری میں کریم آباد کے عوام اور سول سوسائٹیز اور دیگر اداروں کے نمائندوں کی جانب سے ہنزہ کریم آباد سیوریج لائین کی خستہ حالی،رابطہ سڑکوں کی تعمیر، خواتین ہسپتال کی فعالی، پینے کے صاف پانی کی عدم موجودگی ، سیلاب کے باعث تباہ شدہ پانی کے چینلوں کی مرمت ، ذمینوں کا کمپنسیشن ، صفائی کا فقدان، گرلز ہائی سکول کی بلڈنگ کی خستہ حالی ، رابطہ سڑکوں کی ٹینڈر میں تاخیر ، ڈسٹرکٹ بیس فیصد فنڈ کے اجراہ میں تاخیر سمیت کئی مسائل اور شکایات کے ڈھیر لگائے ۔ 

ہنزہ ڈپٹی کمشنر ہنزہ کی جانب سے تمام لائین ڈیپارٹمنٹ کے عہداران کے ہمراہ کریم آباد ہنزہ کے عمائدین و نوجوانان کے ساتھ کھلی کچہری کا انعقاد۔ 

کریم آباد کے مسائل کو اولین ترجیح دیکر حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ سعید علی اصغر
ہنزہ ڈیپٹی کمیشنر ہنزہ کے جانب سے کریم اباد ہنزہ کے مسائل سننے کے لیے عمادین کریم آباد اور یوتھ کے ساتھ کھلی کچہری کا انعقاد کیا ۔اس اہم اجلاس کا انعقاد کرنے کا مقصد کریم اباد کے مسائل کو سننا تھا۔ اس کھلی کچہری میں ہنزہ کے تمام لائن ڈیپارٹمنٹز کے اعلٰی عہداران نے بھی شرکت کی۔اس کھلی کچہری میں کریم آباد سمیت ہنزہ کے تمام مسائل کے پر مختلف محکوں کی جانب سے عوام کو بریفنگ دی گئی۔

اس موقع پر کریم آباد کے سول سوسائٹیز کی جانب سے کریم آباد ہنزہ کا سب اہم مسلہ پچیس سالہ پرانہ سیوریج لائین کا اٹھایا گیا اس موقع پر سول سوسائٹیز کے مشترکہ موقف پیش کرتے ہوئے کہا گیا کہ کریم آباد سیاحوں اور بین الاقوامی وفود کا مرکز ہے اور گلگت بلتستان اور پاکستان کا مثبت چہرہ پیش کرنے میں ہنزہ کریم آباد کا اہم کردار رہا ہے ، کریم آباد ،گنش اور مومن آباد کی تاریخی اور سیاحتی حیثیت کو مد نظر رکھتے ہوئے پچیس سال پہلے اپنی مدد آپ اور ڈونر کی فنڈز کی مدد سے سیوریج کا نظام قائم کیا گیا تھا ،آج یہ سیوریج لائین اپنی مدت پوری کرنے کی وجہ سے خستہ حالی کا شکار ہے،اگر حکومت ااس منصوبے کی بروقت مرمت نہیں کرے گی تو سیاحت کے سیزن میں یہ بہت بڑا ماحولیاتی ڈزاسٹر ہو سکتا ہے۔

ہنزہ ۔ کریم آباد ہنزہ ڈپٹی کمشنر کی جانب سے منعقدہ کردہ کھلی کچہری میں عوام کے مسائل سنے جارہے ہیں

اس موقع پر ڈیپٹی کمشنر ہنزہ سعید علی اصغر نے ہنزہ اکا مجموعی صورت حال اور مجموعی سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ کھلی کچہری رکھنے کا مقصد اور اس کا فائدہ یہ ہے کہ یہان بیک وقت زندگی کے تمام طبقات کے ساتھ ملنے اور ان کو سن کا موقع ملتا ہے جس کی وجہ سے کلی صورت حال کو سمجھنے کا موقع ملتا ہے۔ واٹر چینل کی مرمت کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ التت اور بلتت کے تمام واٹر چنلز کی مرمت کے لیے 3 کروڑ 45 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں۔

کمپنسشن کے حوالے سے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ابھی تک پرانا ریٹ چل رہے ہیں ۔اور ترقیاتی پروجیکٹ کے لیے استعمال ہونے والا زمین کا پرانا ریٹ ہی دیا جائے گا ہم نے پورئے ہنزہ کے لیے New Land Compancation Proposial جمع کروایا ہے منظوری کے بعد ہی نئے ریٹ دئیے جا سکتے ہیں یاد رہے کہ ضلع ہنزہ میں زمینوں کا سرکاری ریٹ بہت کم ہونے کی وجہ سے ترقیاتی کاموں کے لیے زمینوں حصول مشکل سے مشکل تر ہوتا جا رہا ہے ۔

ہنزہ ۔ کریم آباد ہنزہ ڈپٹی کمشنر کی جانب سے منعقدہ کردہ کھلی کچہری میں عوام کے مسائل سنے جارہے ہیں

ڈیپتی ہیلتھ آفیسر نے کہا کہ جب میں نے ہنزہ میں چارج سنبھالا تھا تب ہنزہ میں صرف دو ڈاکٹرز تعنات تھے اب ہم سے پورے ہنزہمیں 14 ڈاکٹرز تعنتات کیے ہیں جس کی وجہ پہلے کے نسبت صورت حال کافی بہتر ہوا ہے۔
اس موقع پر کیپٹن ریٹائیرڈ سید علی اصغر ڈپٹی کمشنر ضلع ہنزہ نے تمام متعلقہ محکموں کے افسران کو تمام شکایات کا اذالہ کرنے اور کام میں تیزی پیدا کرنے کی ہدایات دئیے اور آئندہ چند ہی دنوں میں کارکردگی کو بہتر بنانے اور عوام کو سہولیات فراہم کرنے کی ہدایات دیئے۔

اس موقع پر کریم آباد کا سب سے اہم مسلہ سیوریج کے مین لائینوں کی مرمت کرنے اور سیوریج کے نظام کو سیاحت کے سیزن میں خراب ہونے سے بچانے کے لیے احکامات جاری کئیں۔

Advertisement
Click to comment

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

خبریں

ہنزہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ

اسلم شاہ

Published

on

ہنزہ (اسلم شاہ) بروقت واجبات کی عدم ادائیگی کے باعث محکمہ برقیات کے لیے ڈیزل کی سپلائی میں تعطل کے باعث ہنزہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ، جبکہ محکمہ پولیس ہنزہ کی جانب سے ادائیگیاں نہ ہونے کے باعث پٹرول پمپ مالکان نے محکمہ پولیس کو پٹرول کی ترسیل بند کردی۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ پولیس ہنزہ کی پٹرول پمپ کے مالکان کو 35لاکھ سے زائد کا رقم واجب الادا ہے جس کے باعث پٹرول پمپ مالکان نے محکمہ پولیس کو پٹرولیم مصنوعات کی ترسیل بند کردی ہے پٹرول پمپ کے انتظامیہ کا کہنا ہے محکمہ پولیس کی جانب سے ادائیگیوں میں مسلسل تاخیر کے باعث پٹرول کی مصنوعات کی ترسیل بند کردی گئی ہے محکمہ کی جانب سے کوئی موقف سامنا نہیں آیا ہے۔ محکمہ پولیس کو تیل کی ترسیل بند ہونے کی وجہ سے بہت سے اہم معملات میں مشکلات کا سامنا ہو سکتا ہے۔

پٹرول پمپ کے انتظامیہ کے مطابق محکمہ برقیات کی جانب سے ادائیگیوں میں تاخیر کے باعث محکمے کو مسلسل تیل کی فراہمی میں مشکلات کا سامنا ہے اور پمپ انتظامیہ کو تیل کی ترسیل میں بھی مشکلات کا پیدا ہو رہے ہیں، جبکہ دوسری طرف ہنزہ میں لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں بھی اضافہ ہوا ہے۔یاد رہے کہ ہنزہ میں موجود تین میں سے دو ڈیڑل جنریٹر ہی کام کر رہے ہیں۔

Continue Reading

خبریں

ہنزہ پریس کلب میں سول سوسائٹی اور سیڈو گلگت بلتستان کا اہم اجلاس

Avatar

Published

on

سیڈو گلگت بلتستان اور حکومت گلگت بلتستان کی مشترکہ مہم تمباکو سموک فری گلگت بلتستان مہم کے تحت سموک تمباکو سموک فری ہنزہ کے تحت ہنزہ پریس کلب میں سول سوسائٹی اور سیڈو گلگت بلتستان کا ایک اہم اجلاس اور پریس کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ اجلاس میں ہنزہ بھر سے سول سوسائیٹیز جن میں چیمبر آف کامرس ہنزہ کے ایگزیکٹیو ممبر اور سابقہ نائب صدر فدا کریم، بزنس ایسوسی ایشن ہنزہ کے صدر سلمان کریم، ہوٹل ایسوسی ایشن علی آبادشاہ نواز،کریم آباد یلفئیئرایسوسی ایشن کے صدر ایاز اللہ بیگ، ایل ایس او حیدر آباد کے جنررسیکریٹری بشارت علی، ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کے صدر خوش آمدین،ٹاون منیجمنٹ کریم آباد ہنزہ کے فنانس سیکرٹیری جہانگیر شاہ اور ایل ایس او حیدر آباد ہنزہ کے نائب صدر افتخار علی کے ساتھ دیگر سول سوسائیٹیز کے ممبران و عہداداران نے شرکت کی عہداداران نے شرکت کی۔

اجلاس اور پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیف ایگزیکٹیو آفیسر سیڈو گلگت بلتستان عزیز کریم نے کہا کہ گلگت بلتستان سیڈو او ر گلگت بلتستان حکومت نے مل کر گلگت بلتستان کی نئی نسل تمباکو نوشی کی لعنت سے دور رکھنے کے کیے گلگت ڈویژن کے چار اضلاع تمباکو سموک فری گلگت بلتستان کا آغاز کیا گیا ہے، اس مہم کا اہم مقصد گلگت بلتستان میں حکومت کے ساتھ مل کر تمباکو نوشی کے متعلق قوانین پر عمل درآمد کروانا اور انسداد تمباکو نوشی کے ایکٹ 2002 کے مطابق قوانین پر عمل در آمد کروانا ہے۔

گلگت بلتستان کی حکومت اس مہم میں سیڈو کے ساتھ برابر کا ساتھ دے رہی ہے او ر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمٰن نے اس مہم کو سرکاری سطح حصہ بننے کا اعلان کر کے باضابطہ طور پر اس مہم میں شمولیت اختیار کی ہے۔ گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی میں انسداد تمباکو کے لیے باقائدہ قانون سازی میں حکومت او ر اپوزیشن دونوں نے تعاون کیا ہے او ر جلد اس حوالے بل اسمبلی میں پیش کی جائے گی۔ ا نہوں نے مزید کہا کہ اس مہم کا ایک اہم مقصد یہ ہے کہ ہم اپنی نئی نسل کو اہم لعنت سے بچا سکیں۔

اس موقع پر انہوں سیڈو گلگت بلتستان کے اس مہم کے حوالے سے کئے گئے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ سیڈو کی کوششوں سے کمشنر گلگت ڈویژن نے گلگت ڈویژن کے تمام اضلاع میں ڈپٹی کمشنرز کے زیر نگرانی ضلعی ٹاسک فورس کا قیائم کئے ہیں جو کہ اضلاع میں انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کی ذمہ دار ہونگے۔
پر یس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فدا کریم ایگزیکٹیو ممبراو رسابقہ صدر ہنزہ چیمبر آف کامرس نے کہا کہ سیڈو نے ہمارے بچوں کی مستقبل تباہ ہونے سے بچانے کے لیے بہت اہم قدم اُٹھایا ہے او ر اس مہم میں ہم ہنزہ کے تمام سول سوسائئیٹز اس مہم میں ہر قسم کی تعاون اور مدد کے لیے تیار ہیں۔

انہوں نے مذید کہا کہ بعض سرکاری آفیسرز اور ڈاکٹرز دوران ڈیوٹی تمباکو نوشی کرتے ہیں جس سے معاشرے کو ایک منفی تاثر جاتا ہے اور ساتھ ساتھ وہ قانون کی خلاف ورزی کے بھی مرتکب ہوتے ہیں ایسے آفیسرزکو چاہیے کہ وہ خود قانون شکنی سے باز رہیں اور معاشرے کو بھی اس لعنت سے دور رکھنے میں معاونت کریں۔


پریس کانفرنس میں ایل ایس او حیدر کے جنرل سیکرٹیری بشارت علی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سیڈو نے ہنزہ کے تمام سول سوسائٹیز کا کام آسان کیا ہے اور اس مہم سے بچوں کو اس لعنت سے دور رکھنے او ر حکومت کو قوانین پر عمل درآمد کروانے میں مدد ملی گی۔

اس اجلاس اور پریس کانفرنس میں صدر بازار ایسوسی ایشن سلمان کریم، ایاز اللہ بیگ صدر ویلفیئر ایسوسی ایشن کریم آباد ہنزہ اور شاہ نواز شاہ صدر ہوٹل ایسوسی ایشن نے تمباکو سموک فری ہنزہ مہم کو علاقے کے لیے خوش آئند قرار دیتے ہوئے اس مہم میں بھر پو ر تعاون کرنے کی یقین دہانی کروائی۔

غیر سرکاری اور فلاحی ادارہ اور ہنزہ بھر کے سول سوسائیٹیز کے مہم کا مقصد بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے قوانین پر عمل درآمد کروانا ہے۔

Continue Reading

خبریں

ہنزہ میں بجلی کی غیر منصفانہ تقسیم کار کے باعث کریم آباد کے کاروبار مشکلات کا شکار

اسلم شاہ

Published

on

Karimabad Hunza Power outage

ہنزہ (بیورورپورٹ) ہنزہ میں بجلی کی غیر منصفانہ تقسیم کار کے باعث کریم آباد ہنزہ کے کاروباری حضرات مشکلات کا شکار ہیں بجلی کی منصفانہ تقسیم کار کے ذریعے بزنسسے منسلک افراد اور عوام الناس کے مسائل کو کم کرنے کی کوشش کی جائے۔ عبدالحمید صدر بزنس ایسوسی ایشن کریم آباد ہنزہ اور ایسوسی ایشن کے ممبران۔

تفصیلات کے مطابق صدر کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن عبدالحمید نے مقامی میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہنزہ کو اس وقت بجلی کی شدید قلت کا سامنا ہے گلگت بلتستان میں سب سے زیادہ بجلی کا بحران ہنزہ میں پایا جاتا ہے حکومت گلگت بلتستان اور اعلیٰ حکام کی یقین دہانیوں کے باوجود مسلسل ہنزہ کو نظر انداز کیا جا رہا ہے،اور ہنزہ میں موجود بجلی کی تقسیم کار میں کریم آباد ہنزہ کو مسلسل نظر انداز کیا جا رہا ہے، انھوں نے مزید کہ کریم آباد ہنزہ کے بزنس سے منسلک افراد مسلسل بجلی کی بندش کے باعث مشکلات سے دو چار ہیں۔

Karimabad Hunza Power outage

کریم آبادہنزہ بازار کو دیگر علاقوں کی نسبت زیادہ لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے کیونکہ مسگر پاور ہاوس کی پیداوار میں سردی بڑھنے کے ساتھ ساتھ مسلسل کمی کے باعث حالات سنگین ہوتے جا رہے ہیں اور دن کے وقت بازار کو مشکل سے ایک گھنٹے کی بجلی فراہم کی جاتی اور دیگر کمرشل علاقوں کو بجلی کی فراہمی تسلی بخش ہے اس لیے، محکمہ برقیات بجلی کی منصفانہ تقسیم کو یقینی بناتے ہوئے کریم آباد بازار کو دیگر کمرشل علاقوں کی طرح بجلی کی فراہمی یقینی بنایا جائے۔

Continue Reading

مقبول تریں