Connect with us

خبریں

ہنزہ کریم آباد میں سیورج لائین کا پچیس سال پرانا نظام مخدوش ہو کر رہ گیا

ملکی اور بین الاقوامی سطح پر مشہور سیاحتی و تاریخی مقام کریم آباد، گنش اور مومن آباد ہنزہ میں حکومتی اور انتظامی اداروں کی عدم دلچسپی اور غفلت کے باعث سیورج لائین کا پچیس سالہ پرانہ نظام مخدوش ہو کر رہ گیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق سیوریج لائن کا پانی پینے کے صاف پانی کے ساتھ شامل ہونا شروع ہوگیا ہے۔ سیوریج کاپانی پینے کے پانی کے ساتھ ملنے کے باعث کریم آباد ٹاؤن منیجمنٹ سوسائٹی کے صدر و اراکین کے خلاف ایف آئی آر درج ہونے کی نوبت تک آئی۔

اسلم شاہ

Published

on

ہنزہ (اسلم شاہ) ملکی اور بین الاقوامی سطح پر مشہور سیاحتی و تاریخی مقام کریم آباد، گنش اور مومن آباد ہنزہ حکومتی اور انتظامی اداروں کی عدم دلچسپی اور غفلت کے باعث سیورج لائین کا پچیس سالہ پرانا نظام مخدوش ہوگیا ہے۔ پچیس سال پہلے قائم کردہ سیوریج کا نظام حکومت اور انتظامیہ کی غفلت اور لاپروائی کا نذر ہورہا ہے۔ مذکورہ سیوریج کا نظام ہی وہ واحد نظام ہے جو ہنزہ کریم آباد جیسے سیاحتی مقام کوسیاحت کے سیزن میں سنبھالتا ہے قومی اور بین لاقوامی شخصیات کا سب سے پہلا منزل بھی یہی علاقہ ہوتا ہے۔ اس کے باوجود ہنزہ کریم آبادجیسے اہم سیاحتی اور تاریخی مقام کو اس طرح نظر انداز کرناسیاحت کو تباہ کرنے کے مترادف ہے۔

صدر مملکت اسلامی جمہویہ پاکستان، گلگت بلتستان حکومت ، چیف سیکرٹری گلگت بلتستان اور لوکل انتظامیہ نے حالات کی سنگینی کا ادراک کرتے ہوئے مسلے کے حل کے لیے اقدامات اُٹھانے کی یقین دہانیوں کے باوجود اس مسلے کو حل کرنے کے لیے کوئی عملی اقدامات نہ اُٹھایا گیا جس کے باعث مسائل میں مزید اضافہ ہورہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سیوریج کا پانی پینے کے صاف پانی میں ملنے سے بالخصوص گنش اور گرلت کی قدیم آبادیوں اور بالعموم کریم آباد بلتت میں سنگین مسائل کا سامنا ہے۔ بڑوں اور بچوں میں مختلف موذی امراض پھلنے لگی ہیں۔ ان حالات کے باعث علاقے میں نہ صرف شدید بے چینی پائی جاتی ہے بلکہ آپس میں فساد کے خطرات پیدا ہوئے ہیں۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے کریم آباد ٹاؤن منیجمنٹ کے صدر ایڈوکیت رحمت کریم ہنزائی نے اس صورتحال پر شدید غم اور غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس علاقے کے منتخب کردہ نمائندہ سابق گورنر میر غٖضنفر علی خان، ان کی زوجہ عتیقہ غضنفر اور ان کے صاحبزادہ سلیم خان کے پاس اختیارات و حکومت ہونے کے باوجود اس اہم مسلے کو جان بوجھ کر پس پشت ڈالا گیا جس کی وجہ سے آج کے بدترین حالات رونما ہوئے۔

ان کا کہنا تھا کہ متعلقہ ٹاؤن منیجمنٹ سوسائٹی کے شاندار پروجیکٹ پر برٹش ائیر ویز نے بین الاقوامی سند سے نوازا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس پروجیکٹ کی مرمت کے لیے تمام صارفین سے مخصوص فیس کی وصولی کی بنیاد پر مرمتی کا جاری تھا۔ خود حکومتی عہداداروں کی عدم تعاون کے باعث بہت سارے دیگر صارفین نے فیس کی ادائیگی روک دی اور نتیجہ حالیہ حالات پر انجام ہوا۔

انہوں نے گلگت بلتستان حکومت اور چیف سیکرٹری گلگت بلتستان بابر حیات تارڈ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر حکومت ہنگامی بنیادوں پر اس مسلے کے حل کے لیے اقدامات نہ اُٹھائے تو نہ صرف انسانی جانوں کو خطرہ ہے بلکہ مقامی آبادیوں میں آپس میں فساد کا بھی شدید خطرہ ہے۔

اسلم شاہ کا تعلق ضلع ہنزہ سے ہے اور وہ ہنزہ پریس کلب کے رکن اور ماہنامہ کنجوت ٹوڈے میگزین کے ایڈیٹر بھی ہیں

Advertisement
Click to comment

خبریں

گلگت، ہنزہ، نگر اور غذر میں انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کی مہم جاری

رحیم امان

Published

on

امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ

ہنزہ (رحیم امان) ہنزہ میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں آپنا مثبت کردار ادا کریں گے، نوجوان قوم کا مستقبل ہیں اور قوم کی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے اپنا بھر پو رحصہ ڈالیں گے۔ سیڈو گلگت بلتستان کی اس مہم میں ضلعی انتظامیہ بھر پو رساتھ دے گی۔ امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ
حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو گلگت بلتستان کا مشترکہ مہم تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کے تحت گلگت ڈویژن کے چار اضلاع ضلع گلگت،ضلع ہنزہ،ضلع نگر، اور ضلع غذر میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے محفوظ رکھنے اور انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کے لیے جاری مہم ہے۔

اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر علی آباد ہنزہ سے ایک اہم میٹنگ کا انعقاد ہوا،اس موقع پر امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر علی آباد ہنزہ نے کہا کہ ہنزہ میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں آپنا مثبت کردار ادا کریں گے، نوجوان قوم کا مستقبل ہیں اور قوم کی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے اپنا بھر پو رحصہ ڈالیں گے۔ سیڈو گلگت بلتستان کی اس مہم میں ضلعی انتظامیہ بھر پو رساتھ دے گا، اور متعلقہ قوانین کی پاسداری کے لیے ضروری اقدامات اُٹھائے جائے گے۔

اس موقع پر سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے اسلم شاہ ڈسٹرکٹ کواڈینیٹر نے مہم کے اغراض و مقاصد سے ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے گلگت بلتستان حکومت اور سیڈو گلگت بلتستان کی مشترکہ کوششوں گلگت ڈویژ ن کے چاروں اضلاع میں جاری ہے، سیڈو گلگت بلتستان کی کوششوں کے باعث گلگت بلتستان اسمبلی نے انسداد تمباکو ایکٹ پاس کیا ہے اور گورنر گلگت بلتستان کی ڈستخط کے ساتھ ایکٹ منظور ہو کر گزٹ آف پاکستان میں شائع ہو کر باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرچکا ہے۔اس موقع پر انہوں نے ہنزہ میں اس مہم کے حوالے ڈپٹی کمشنر ضلع ہنزہ کے زیر نگرانی قائم کردہ انسداد تمباکو ٹاسک فورس کے بارے میں بھی آگا ہ کیا۔

یاد رہے کہ انسداد تمباکو ایکٹ گلگت بلتستان کے تحت گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے، اور کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔

Continue Reading

خبریں

سیڈو گلگت بلتستان کی کوششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ کی منظوری ایک اہم کامیابی قرار

اسلم شاہ

Published

on

ayaz ullah baig KWA Karimabad Hunza

سیڈو گلگت بلتستان کی انتھک محنت اور کوششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ کی منظوری ایک اہم کامیابی جوکہ نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے بچانے میں سنگ میل ثابت ہوگا۔ ایاز اللہ بیگ صدر کریم آباد ویلفیئر آگنائزیشن۔

سیڈو گلگت بلتستان کی انتھک محنت اور کوششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ کی منظوری ایک اہم کامیابی جوکہ نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے بچانے میں سنگ میل ثابت ہوگا۔اس ایکٹ کی منظوری کے بعد اب انتظامیہ پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ ان قوانین پر عمل درآمد کروانے کرنی کی اپنی ذمہ داری پوری کرے۔

ان خیالات اظہار ایاز اللہ بیگ صدر کریم آباد ویلفیئر آگنائزیشن نے سیڈو کے نمائندے سے ملاقات میں کی۔اس موقع پر ان کاکہنا تھا کہ گلگت بلتستان اورخاص کر ہنزہ میں انسداد تمباکو نوشی کے خلاف قوانین کے بارے میں عوام کو شعور دینے میں حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو کے مشترکہ مہم تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کا اہم کرادر رہا ہے اور اب ان قوانین پر حکومت اور انتظامیہ سے عمل درآمد کروانے میں سیڈو اپنا اہم کردار ادا کرے تاکہ ایکٹ کی منظوری کے بعد اس ایکٹ پر اصل روح کے مطابق عمل درآمد ہو۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ہنزہ اورخاص کر کریم آباد کے تمام سول سوسائیٹیز اس مہم کو کامیان بنانے کے لیے اور قوانین پر عمل درآمد کروانے کے ہراول دستے کاکردار ادا کرینگے۔

یاد رہے کہ انسداد تمباکو ایکٹ گلگت بلتستان کے تحت گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے، اور کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔

Continue Reading

خبریں

صدر اسماعیلی ریجنل کونسل ہنزہ کرنل ریٹائرڈ امتیاز الحق کا تماکونوشی کے خلاف کردار پر زور

رحیم امان

Published

on

Colonel Retired Imtiaz ul Haq

تمباکو سے پاک گلگت بلتستان مہم نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے دور رکھنے میں اہمیت کا حامل ہے، اپنی آئندہ نسل کو تمباکو نوشی سے لعنت سے دور رکھنے کے لیے سب کو ملکر عملی کو ششوں کی ضرورت ہے،حکومت تمباکو نوشی سمیت دیگر نشہ آور اشیاء کے خلاف قوانین پر عمل درآمد کروانے میں اپنامثبت کردار ادا کرے، ان خیالات کے اظہار کرنل (ر) امتیاز الحق نے سیڈو گلگت بلتستان ہنزہ کے نمائندے اسلم شاہ سے ”تمباکو نوشی سے پاک ہنزہ مہم “ کے حوالے سے شیعہ امامی اسماعیلی ریجنل کونسل علی آباد ہنزہ میں منعقد ایک میٹنگ میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان اسمبلی سے حالیہ منظور شدہ ایکٹ کے تحت گلگت بلتستان اور ضلع ہنزہ میں اٹھارہ سال سے کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی دیگر اور نشہ آور اشیاء کی خریدو فروخت پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ ہنزہ کی جماعت ان قوانین پر عمل درآمد کو یقینی بناکراپنے بچوں کو سگریٹ نوشی اور منشیات کی لعنت سے بچائیں۔انہوں نے مزید کہاکہ اپنی آئندہ نسل کو منشیات سے بچانے کے لیے آج ہم سب نے ملکر ان کوششوں میں شامل ہونے کی ضرورت ہے۔

اس موقع پر انہوں حکومت اور انتظامیہ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ نئی نسل کو منشیات سے دور رکھنے کے حوالے سے ہماری حکومت اور انتظامیہ سے گزارش ہوگی کہ ضلع ہنزہ میں متعلقہ قوانین پر عمل درآمد کرواکر آئندہ نسل کو تمباکو نوشی جیسے بنیادی نشے سے دور رکھنے میں اپنا مثبت کردار ادا کرے۔

اس سے بیشتر سیڈو گلگت بلتستان کے نمائندے اسلم شاہ نے تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کے حوالے سے کرنل (ر) امتیازالحق صدر اسماعیلی ریجنل کونسل ہنزہ تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو گلگت بلتستان کی مسلسل کو ششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ 2020 گلگت بلتستان اسمبلی سے پاس ہونے کے بعد گورنر گلگت بلتستان کی منظوری کے بعد گزٹ آف پاکستان میں شامل ہو کرباقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرگئی ہے۔اس ایکٹ کے تحت ا گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے۔

کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ نئی نسل کو اس لعنت سے دور رکھنے کے لیے سیڈو گلگت بلتستان گلگت بلتستان کے تمام مذہبی اور سماجی اداروں کے ساتھ ملکر کوشاں ہے۔

یاد رہے کہ گلگت بلتستان اسمبلی کے انسداد تمباکو نوشی ایکٹ پاس کرنے اور گورنر گلگت بلتستان کی دستخط کے بعد ایکٹ باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرچکی ہے سیڈو کی اس کاوش کوگلگت بلتستان کے تمام مذہبی اور سماجی اداروں کی جانب سے سراہا جا رہا ہے، اور دیگر منشیات کے خلاف بھی اسی طرز کی قانون سازی اور مہم پر زور دی جا رہی ہے۔

Continue Reading

مقبول تریں