Connect with us

خبریں

گلگت بلتستان اسمبلی سے منظوری کے بعد انسداد تمباکو میں آسانی

اسلم شاہ

Published

on

ہنزہ (اسلم شاہ) گلگت بلتستان اسمبلی سے ایکٹ کی منظوری کے بعد انسداد تمباکو میں آسانی پیدا ہو گئی ہے. اس مہم سے ضلع ہنزہ کے نئی نسل کو تمباکو نوشی اور اور تمباکو نوشی کے متعلق دیگر منشیات سے دور رکھنے میں معاونت ملی گی۔نئی ایکٹ کے تحت قوانین کی سختی سے انسداد تمباکو کے لیے بہت اہمیت کے حامل ہیں۔

ان خیالات کا اظہار تمباکو سموک فر ی ہنزہ مہم کے ترجمان اور انسداد تمباکو ٹاسک فورس ہنزہ کے ممبر جبار خان ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن ضلع ہنزہ نے سیڈو ہنزہ کے نمائندے سے ماہانہ کارکردگی جائزہ کے حوالے سے ملاقات میں کی۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ سیڈو اور حکومت گلگت بلتستان کی طرف سے ہنزہ میں جاری مہم کے مثبت اثرات آنے والے وقتوں میں واضح طور پر نظر آئیں گے، کیونکہ نئی نسل کو تمباکو نو شی سے بچانے کے لیے گلگت بلتستان اسمبلی نے جو ایکٹ منظور کی تھی گو رنر گلگت بلتستان کی دستخط کے بعد باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرچکی ہے اور اس ایکٹ کے تحت تعلیمی اداروں اور صحت کے اداروں سے اطراف میں دو سومیٹر کے حددد میں کسی بھی قسم کی تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کی ممانیت ہوگی اور یہ اقدام تعلیمی اداروں کے حوصلہ افزا ہوگی۔

اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن ضلع ہنزہ نے اس مہم کو کامیاب بنانے اور نئی نسل کو منشیات جیسے لعنت سے دور رکھنے کے لیے محمکہ تعلیم ہنزہ کی جانب سے ہر قسم کی تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ یہ مہم ہم سب کی مہم ہے اور نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے نقصاندہ اور مضر عادت سے دور رکھنا ہم سب کا فرض ہے۔سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے قوانین پرعمل درآمد کروانے کی کوشش میں میں ہم سب برابر کے شریک ہیں، جہاں قانون شکنی ہوگی وہاں ہم بھی اس ادارے کے ساتھ مل کر نشاندہی کریں گے۔

اس موقع پر سیڈو گلگت بلتستان کے نمائندے کی جانب سے ضلع میں ہونے والے تمام سرگرمیوں سے ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن ضلع ہنزہ کو آگاہ کیا، جس پر انہوں نے اطمنان کا اظہار کیا۔

اسلم شاہ کا تعلق ضلع ہنزہ سے ہے اور وہ ہنزہ پریس کلب کے رکن اور ماہنامہ کنجوت ٹوڈے میگزین کے ایڈیٹر بھی ہیں

Advertisement
Click to comment

خبریں

سب ڈویژن گوجال ہنزہ کے اسسٹنٹ کمشنر اور تحصیل کے دفاتر سموک فری قرار

اسلم شاہ

Published

on

محمد ذولقرنین خان اسسٹنٹ کمشنر سب ڈویژن گوجال ہنزہ

ہنزہ (اسلم شاہ) سب ڈویژن گوجال ہنزہ میں غیر سرکاری و فلاحی ادارہ سیڈو گلگت بلتستان اور گلگت بلتستان حکومت کا مشترکہ مہم انسداد تمباکو نوشی مہم کے تحت محمد ذولقرنین خان اسسٹنٹ کمشنر سب ڈویژن گوجال ہنزہ نے اسسٹنٹ کمشنر اور تحصیل کے دفاتر کو سموک فری قرار دیکر باقاعدہ مہم کا آغاز کیا۔

اس موقع پر محمد ذولقرنین خان اسسٹنٹ کمشنر سب ڈویژن گوجال ہنزہ نے کہا کہ کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے سیڈو گلگت بلتستان کی کاوشیں قابل تحسین ہیں،اس مہم کے تحت سب ڈویژن گوجال ہنزہ میں کم عمر بچوں تمباکو نوشی جیسے لعنت سے دور رکھنے میں مدد ملی گی، گلگت بلتستان حکومت کی جانب سے حالیہ منظور کردہ انسداد تمباکو نوشی ایکٹ میں وضع کردہ قوانین پر عمل درآمد کروانے میں انتظامیہ اپنا بھر پور مثبت کردار ادا کرے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ سب ڈویژن گوجال سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے اور جس طرح پلاسٹک فری ہنزہ مہم کی وجہ سے نہ صرف ملکی سطح پر بلکہ بین الاقوامی سطح پر پزیرائی ملی ہے اس مہم کے باعث مزید ہنزہ کا مثبت چہرہ دنیا کے سامنے آئے گا۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ سب ڈویژن گوجال ہنزہ میں کسی کو بھی انسداد تمباکو کے قوانین کی خلاف ورزی کی اجازت نہیں دی جائے گی تاکہ نئی نسل اس لعنت سے دور رہ سکیں۔

اس موقع پر محمد ذولقرنین خان اسسٹنٹ کمشنر سب ڈویژن گوجال نے اے سی آفس میں اسٹیکر لگا کر اور تحصیل کے دفاتر میں اسٹیکر لگاوا کرعملی طور پر سرکاری دفاتر میں تمباکو نوشی پر پابندی لگائی۔

یاد رہے کہ گلگت بلتستان حکومت نے انسداد تمباکو نوشی ایکٹ کے ذریع گلگت بلتستان میں اٹھارہ سال سے کم عمر کے بچوں کو تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت، تعلیمی اداروں اور صحت کے مراکز کے دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی خرید وفروخت، کھلا سگریٹ کی فروخت(یعنی دانوں کی شکل میں فروخت) اور سموگل اسگریٹ کی فروخت کو غیر قانونی قرار دیا ہے۔ اور یہ بھی لازمی قرار پایا ہے کہ تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے کے لیے باقاعدہ لائسنس حاصل کرنا ہوگا۔

Continue Reading

خبریں

ہنزہ میں بچوں کو تمباکو نوشی سے دُور رکھنے کے لیے کروائی جائے گی

رحیم امان

Published

on

ہنزہ میں بچوں کو تمباکو نوشی سے دُور رکھنے کے لیے کروائی جائے گی

ہنزہ (رحیم امان) ہنزہ میں بچوں کو تمباکو نوشی سے دُور رکھنے کے لیے اور انسداد تمباکو کے قوانین پر بھر پور عمل درآمد کروائی جائے گی۔ فرمان کریم تحصیل دار علی آباد ہنزہ. سیڈو گلگت بلتستان اور حکومت گلگت بلتستان کی مشترکہ مہم تمباکو نوشی سے پاک گلگت بلتستان کے تحت ضلع ہنزہ میں تمام اٹھارہ سال سے کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کو فروخت کرنے پر پابندی عائد ہے۔جس کے لیے ضلعی سطح پر ٹاسک فورس بھی قائم کی گئی ہے۔

ٹاسک فورس کا ماہانہ اجلاس منعقد ہوتا ہے جس میں ضلعی ٹاسک فورس کی کارکردگی کا جائزہ لیاجاتا ہے۔انسداد تمباکو ٹاسک فورس ضلع ہنزہ کے رکن اور تحصیل دار علی آباد ہنزہ فرمان کریم سے سیڈو گلگت بلتستان ضلع ہنزہ کے نمائند ے اسلم شاہ نے تحصیل دار آفس علی آباد ہنزہ میں مُلاقات کی،اس مُلاقات میں تحصیل علی آباد میں انسد اد تمباکو کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کے لیے کئے جانے والے اقدامات کا جائز لیا گیا اور اس مہم کو اور موثر بنانے کے لیے سفارشات پیش کئے گئے۔

فرمان کریم تحصیل دار علی آباد ہنزہ

اس موقع فرمان کریم تحصیل دار علی آباد نے کہا کہ سیڈو اور حکومت گلگت بلتستان کے مشترکہ مہم کے باعث عوام میں انسداد تمباکو نوشی کے قوانین کا شعور پیدا ہوا ہے،اور ہنزہ میں بچوں کو تمباکو نوشی سے دُور رکھنے کے لیے اور انسداد تمباکو کے قوانین پر بھر پور عمل درآمد کروائی جائے گی۔اس موقع پر سیڈو گلگت بلتستان کے ضلع ہنزہ کے نمائندے میں تحصیل میں ہونے والے انسداد تمباکو نوشی کی خلاف ورزیوں کی نشاندہی کرتے ہوئے قانونی کاروائی کرنے کی استداعا کی۔

Continue Reading

خبریں

ہنزہ علی آباد کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کو تمباکو سموک فری قرار دے گیا

اسلم شاہ

Published

on

ہنزہ علی آباد کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کو تمباکو سموک فری قرار دے گیا

ہنزہ (اسلم شاہ) تمباکو سموک فری ہنزہ مہم کے تحت ڈاکٹر ممتاز احمد ڈپٹی ہیلتھ آفیسر ہنزہ عزیز کریم اور سی او سیڈو گلگت بلتستان نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال علی آباد ہنزہ کو تمباکو سموک فری قرار دے کر افتتاح کیا۔
اس موقع پر ڈاکٹر ممتاز احمد ڈپٹی ہیلتھ آفیسر ضلع ہنزہ نے کہا کہ سیڈو گلگت بلتستان لوگوں کو صحت کے لیے یہ ایک اہم ٓگاہی مہم اور آج کا یہ پروگرام بھی لوگوں کو آگاہی دینے کی ایک کڑی ہے گلگت بلتستان ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ اور ڈبلیو ایچ او کی جانب سے بھی ہمیں احکامات موصول ہوئی ہیں کہ کورونا کی موجودہ صورتحال میں تمباکو نوشی خود کشی کے مترادف ہے ایسے پروگراموں سے محکمہ صحت کی معاونت ہوتی ہے۔آج سیڈو گلگت بلتستان کے تعاون سے اس تمباکو نوشی کے خلاف ہمارے پیغام کو بھی موثر انداز میں لوگوں تک پہنچتے گا۔یہ ایک ایسا مہم ہے جسے ڈبلیو ایچ او، حکومت پاکستان اور حکومت گلگت بلتستان بھی کی حمایت حاصل ہے اور اب ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ اپنی آنے والی نسل کو منشیات سے پاک رکھنے کے لیے اس مہم کا بھرپور ساتھ دیں اور حکومت کی واضح کردہ اصولوں کے مطابق عمل کریں۔

ہنزہ علی آباد کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کو تمباکو سموک فری قرار دے گیا

اس موقع پر سی او سیڈو گلگت بلتستان عزیز احمد نے کہا کہ سائنسی تحیقیق کے مطابق کورونا کی موجودہ وبا میں تمباکو نوشی کے عادی افراد خاص کو سگریٹ نوشی میں مبتلا لوگ جن کے پھپھڑے کمزور ہوئے ہیں ایسے افراد پر کورونا وائرس زیادہ اثرانداز ہوتا ہے۔ سیڈو اور گلگت بلتستان نے آج ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال علی آباد کو تمباکو سے پاک علاقے کی باقاعدہ افتتاح کرکے یہ پیغام دینے کی کوشش کی ہے کہ ہنزہ کے نوجوان نسل تمباکو نوشی جیسے لعنت سے دور رہے اور ہنزہ میں کم عمر نوجوانوں کو کورونا جیسے مہلک وبا میں تمباکو نوشی کے باعث بڑھتے ہوئے نقصانات سے بچا سکیں۔ جیسا کہ ڈبلیو ایچ او اور ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ تمباکونوشی خاص کرسگریٹ کے دھواں کے ساتھ کورونا وائرس کے پھیلاو کے خطرات میں کئی گنا اضافہ ہوتا ہے اور خود سگریٹ کا عادی شخص ان حالات میں مشکلا ت کا شکار ہوتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ سیڈو گلگت بلتستان کی اور حکومت گلگت بلتستان کی کوششوں سے گلگت بلتستان اسمبلی میں تمباکو نوشی سے متعلق ایکٹ پاس ہوا ہے جس کے بعد گلگت بلتستان میں کم عمر بچوں کو سگریٹ نوشی سے دور رکھنے میں یہ ایکٹ اہم سنگ میل ہے۔

ہنزہ علی آباد کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کو تمباکو سموک فری قرار دے گیا

اس موقع پر رحیم اللہ بیگ ہنزہ پریس کلب کے صدر نے کہا کہ سیڈو گلگت بلتستان اور سی او سیڈو کی بھرپور کوششوں سے ہنزہ سمیت گلگت بلتستا ن میں اس وباء کے دوران بھی مختلف فلاحی کام اور بچوں کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے دور رکھنے کے لیے کوششوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور ہنزہ کے نوجوانوں کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے دور رکھنے کے کی جانے والی کوششوں پر ہنزہ پریس کلب کی جانب سے سیڈو کا شکریہ ادا کرتے ہیں،سیڈو کی ان کوششوں کے باعث آج کل تمباکو نوشی کے خلاف موجود قوانین پرعمل درآمد ہوتا ہوا نظر آتا ہے۔
اس موقع پر علی آباد ڈسٹرکٹ ہسپتال میں باقاعدہ طور پر بورڈ نصب کرکے پورے ہسپتال کو تمباکو نوشی کے ممنوع قرار دیتے ہوئے محکمہ صحت کے تمام ذیلی اداروں کے اطراف میں پچاس میٹر تک کسی بھی قسم کی تمباکو نوشی اور تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے کی ممانیت کی گئی۔

Continue Reading

مقبول تریں