Connect with us

خبریں

“ہنزہ میں بجلی کے بحران کاذمہ دار پیپلز پارٹی ہے” وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن

اسلم شاہ

Published

on

گلگت (جی بی اردو) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ ہنزہ میں بجلی کے بحران کاذمہ دار پیپلز پارٹی ہے، حسن آباد اور مایون پاور ہاؤس کے ٹی جی سیٹ پر ایک سال سے عدالتوں کے ذریعے حکم امتناعی لے رکھے ہیں جس میں پیپلز پارٹی کی صوبائی قیادت ملوث ہے جس کی وجہ سے ان پاور ہاؤسز پر کام رکا ہوا ہے ہم نے ہنزہ کے حوالے سے جو بھی اعلانات کئے ہیں ان سبپر عمل درآمد ہوگا جلد ہنزہکا دورہ کرکے گوجال سب ڈویژن اور شیناکی تحصیل کا افتتاح کرونگا.

اس کے علاوہ ہنزہ میں بجلی کے بحران کے سلسلے میں کام کیا جا رہا ہے ، مسگر پاور ہاؤس پر ہم خصوصی توجہ دے رہے ہیں بہت جلد مسگر پاور ہاؤس سے بجلی فراہم کی جائیگی اس سال گرمیوں میں ہنزہ کے اندر خاطر خواہ لوڈ شیڈنگ میں کمی آئیگی اس وقت ہنزہ میں تھرمل جنریٹرز کے ذریعے ہنزہ کو بجلی فراہم کی جا رہی ہے جس پر کروڑوں روپے لاگت آرہی ہے ،عطا آباد پاور ہاؤس پر چار میگاواٹ کیلئے 25کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں جبکہ اس منصوبے کیلئے مزید پچاس کروڑ روپے درکار ہیں ہم کوشش کررہے ہیں کہ جلد ہم پچاس کروڑ روپے بھی لا سکیں.

اس منصوبے پر 75کروڑ روپے لاگت آرہی ہے عطاء آباد 32.5 میگاواٹ کیلئے بھی ہم وفاقی حکومت سے مسلسل رابطے میں ہیں کیونکہ یہ پی ایس ڈی پی کے فنڈ سے بنناہے جس کی منظوری مل چکی ہے اب اس کیلئے فنڈ مہیا کرنا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ہنزہ پریس کلب کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہنزہ کی تعمیر و ترقی ہماری اولین ذمہ داری ہے کیونکہ ہنزہ ہمارا چہرہ ہے.

ہنزہ پریس کلب کی جانب سے علی احمد نے وزیر اعلیٰ کو ہنزہ کے مسائل کے بارے میں آگاہ کیا جس میں کے کے ایچ کمپنسیشن ، سکیل1 تا9 بین الاضلاعی تقرریاں ، بجلی کے بحران اور دیگر مسائل سے آگاہ کیا جبکہ ہنزہ پریس کلب کے صدر رحیم اللہ بیگ نے ہنزہ پریس کلب کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا وفد میں سینئر نائب صدر اکرام نجمی اور جوائنٹ سیکریٹری اسلم شاہ شامل تھے اور اس ملاقات میں رکن گلگت بلتستان کونسل ارمان شاہ نے خصوصی طور پر شرکت کی اور ہنزہ کے مسائل اور ہنزہ میں صحافیوں کو درپیش مسائلسے وزیر اعلیٰ کو آگاہ کیا

اسلم شاہ کا تعلق ضلع ہنزہ سے ہے اور وہ ہنزہ پریس کلب کے رکن اور ماہنامہ کنجوت ٹوڈے میگزین کے ایڈیٹر بھی ہیں

Advertisement
1 Comment

خبریں

گلگت، ہنزہ، نگر اور غذر میں انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کی مہم جاری

رحیم امان

Published

on

امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ

ہنزہ (رحیم امان) ہنزہ میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں آپنا مثبت کردار ادا کریں گے، نوجوان قوم کا مستقبل ہیں اور قوم کی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے اپنا بھر پو رحصہ ڈالیں گے۔ سیڈو گلگت بلتستان کی اس مہم میں ضلعی انتظامیہ بھر پو رساتھ دے گی۔ امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ
حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو گلگت بلتستان کا مشترکہ مہم تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کے تحت گلگت ڈویژن کے چار اضلاع ضلع گلگت،ضلع ہنزہ،ضلع نگر، اور ضلع غذر میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے محفوظ رکھنے اور انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کے لیے جاری مہم ہے۔

اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر علی آباد ہنزہ سے ایک اہم میٹنگ کا انعقاد ہوا،اس موقع پر امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر علی آباد ہنزہ نے کہا کہ ہنزہ میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں آپنا مثبت کردار ادا کریں گے، نوجوان قوم کا مستقبل ہیں اور قوم کی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے اپنا بھر پو رحصہ ڈالیں گے۔ سیڈو گلگت بلتستان کی اس مہم میں ضلعی انتظامیہ بھر پو رساتھ دے گا، اور متعلقہ قوانین کی پاسداری کے لیے ضروری اقدامات اُٹھائے جائے گے۔

اس موقع پر سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے اسلم شاہ ڈسٹرکٹ کواڈینیٹر نے مہم کے اغراض و مقاصد سے ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے گلگت بلتستان حکومت اور سیڈو گلگت بلتستان کی مشترکہ کوششوں گلگت ڈویژ ن کے چاروں اضلاع میں جاری ہے، سیڈو گلگت بلتستان کی کوششوں کے باعث گلگت بلتستان اسمبلی نے انسداد تمباکو ایکٹ پاس کیا ہے اور گورنر گلگت بلتستان کی ڈستخط کے ساتھ ایکٹ منظور ہو کر گزٹ آف پاکستان میں شائع ہو کر باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرچکا ہے۔اس موقع پر انہوں نے ہنزہ میں اس مہم کے حوالے ڈپٹی کمشنر ضلع ہنزہ کے زیر نگرانی قائم کردہ انسداد تمباکو ٹاسک فورس کے بارے میں بھی آگا ہ کیا۔

یاد رہے کہ انسداد تمباکو ایکٹ گلگت بلتستان کے تحت گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے، اور کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔

Continue Reading

خبریں

سیڈو گلگت بلتستان کی کوششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ کی منظوری ایک اہم کامیابی قرار

اسلم شاہ

Published

on

ayaz ullah baig KWA Karimabad Hunza

سیڈو گلگت بلتستان کی انتھک محنت اور کوششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ کی منظوری ایک اہم کامیابی جوکہ نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے بچانے میں سنگ میل ثابت ہوگا۔ ایاز اللہ بیگ صدر کریم آباد ویلفیئر آگنائزیشن۔

سیڈو گلگت بلتستان کی انتھک محنت اور کوششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ کی منظوری ایک اہم کامیابی جوکہ نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے بچانے میں سنگ میل ثابت ہوگا۔اس ایکٹ کی منظوری کے بعد اب انتظامیہ پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ ان قوانین پر عمل درآمد کروانے کرنی کی اپنی ذمہ داری پوری کرے۔

ان خیالات اظہار ایاز اللہ بیگ صدر کریم آباد ویلفیئر آگنائزیشن نے سیڈو کے نمائندے سے ملاقات میں کی۔اس موقع پر ان کاکہنا تھا کہ گلگت بلتستان اورخاص کر ہنزہ میں انسداد تمباکو نوشی کے خلاف قوانین کے بارے میں عوام کو شعور دینے میں حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو کے مشترکہ مہم تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کا اہم کرادر رہا ہے اور اب ان قوانین پر حکومت اور انتظامیہ سے عمل درآمد کروانے میں سیڈو اپنا اہم کردار ادا کرے تاکہ ایکٹ کی منظوری کے بعد اس ایکٹ پر اصل روح کے مطابق عمل درآمد ہو۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ہنزہ اورخاص کر کریم آباد کے تمام سول سوسائیٹیز اس مہم کو کامیان بنانے کے لیے اور قوانین پر عمل درآمد کروانے کے ہراول دستے کاکردار ادا کرینگے۔

یاد رہے کہ انسداد تمباکو ایکٹ گلگت بلتستان کے تحت گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے، اور کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔

Continue Reading

خبریں

صدر اسماعیلی ریجنل کونسل ہنزہ کرنل ریٹائرڈ امتیاز الحق کا تماکونوشی کے خلاف کردار پر زور

رحیم امان

Published

on

Colonel Retired Imtiaz ul Haq

تمباکو سے پاک گلگت بلتستان مہم نئی نسل کو تمباکو نوشی جیسے لعنت سے دور رکھنے میں اہمیت کا حامل ہے، اپنی آئندہ نسل کو تمباکو نوشی سے لعنت سے دور رکھنے کے لیے سب کو ملکر عملی کو ششوں کی ضرورت ہے،حکومت تمباکو نوشی سمیت دیگر نشہ آور اشیاء کے خلاف قوانین پر عمل درآمد کروانے میں اپنامثبت کردار ادا کرے، ان خیالات کے اظہار کرنل (ر) امتیاز الحق نے سیڈو گلگت بلتستان ہنزہ کے نمائندے اسلم شاہ سے ”تمباکو نوشی سے پاک ہنزہ مہم “ کے حوالے سے شیعہ امامی اسماعیلی ریجنل کونسل علی آباد ہنزہ میں منعقد ایک میٹنگ میں کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان اسمبلی سے حالیہ منظور شدہ ایکٹ کے تحت گلگت بلتستان اور ضلع ہنزہ میں اٹھارہ سال سے کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی دیگر اور نشہ آور اشیاء کی خریدو فروخت پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ ہنزہ کی جماعت ان قوانین پر عمل درآمد کو یقینی بناکراپنے بچوں کو سگریٹ نوشی اور منشیات کی لعنت سے بچائیں۔انہوں نے مزید کہاکہ اپنی آئندہ نسل کو منشیات سے بچانے کے لیے آج ہم سب نے ملکر ان کوششوں میں شامل ہونے کی ضرورت ہے۔

اس موقع پر انہوں حکومت اور انتظامیہ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ نئی نسل کو منشیات سے دور رکھنے کے حوالے سے ہماری حکومت اور انتظامیہ سے گزارش ہوگی کہ ضلع ہنزہ میں متعلقہ قوانین پر عمل درآمد کرواکر آئندہ نسل کو تمباکو نوشی جیسے بنیادی نشے سے دور رکھنے میں اپنا مثبت کردار ادا کرے۔

اس سے بیشتر سیڈو گلگت بلتستان کے نمائندے اسلم شاہ نے تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کے حوالے سے کرنل (ر) امتیازالحق صدر اسماعیلی ریجنل کونسل ہنزہ تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو گلگت بلتستان کی مسلسل کو ششوں کے باعث انسداد تمباکو ایکٹ 2020 گلگت بلتستان اسمبلی سے پاس ہونے کے بعد گورنر گلگت بلتستان کی منظوری کے بعد گزٹ آف پاکستان میں شامل ہو کرباقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرگئی ہے۔اس ایکٹ کے تحت ا گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے۔

کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ نئی نسل کو اس لعنت سے دور رکھنے کے لیے سیڈو گلگت بلتستان گلگت بلتستان کے تمام مذہبی اور سماجی اداروں کے ساتھ ملکر کوشاں ہے۔

یاد رہے کہ گلگت بلتستان اسمبلی کے انسداد تمباکو نوشی ایکٹ پاس کرنے اور گورنر گلگت بلتستان کی دستخط کے بعد ایکٹ باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرچکی ہے سیڈو کی اس کاوش کوگلگت بلتستان کے تمام مذہبی اور سماجی اداروں کی جانب سے سراہا جا رہا ہے، اور دیگر منشیات کے خلاف بھی اسی طرز کی قانون سازی اور مہم پر زور دی جا رہی ہے۔

Continue Reading

مقبول تریں