Connect with us

صنعت

خنجراب ٹاپ پر دنیا کی بلند ترین ATM مشین کا افتتاح

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حافیظ الرحمن اور ٹین کور کمانڈر لفٹنٹ جنرل ملک ظفر اقبال نے خنجراب ٹاپ پر دنیا کے بلند ترین ATMمشین کا افتتاح کیا۔ پاک چین باڈر خنجراب کے مقام پر نیشنل بنک آف پاکستان نے دنیا کا بلند ترین مقام جس کی اونچائی سطح سمندر سے تقریباً 15ہزار 3سو فٹ سے زائد ہے جہاں پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حافیظ الرحمن اور ٹین کور کمانڈر لفٹنٹ جنرل ظفر اقبال نے نیشنل بنک آف پاکستان کے صدر سید آحمد اقبال اشرف اور کمانڈر گلگت بلتستان ثاقف ملک محمود نے افتتاح کیا۔

Published

on

World's highest ATM machine

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حافیظ الرحمن اور ٹین کور کمانڈر لفٹنٹ جنرل ملک ظفر اقبال نے خنجراب ٹاپ پر دنیا کے بلند ترین ATMمشین کا افتتاح کیا۔ پاک چین باڈر خنجراب کے مقام پر نیشنل بنک آف پاکستان نے دنیا کا بلند ترین مقام جس کی اونچائی سطح سمندر سے تقریباً 15ہزار 3سو فٹ سے زائد ہے جہاں پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حافیظ الرحمن اور ٹین کور کمانڈر لفٹنٹ جنرل ظفر اقبال نے نیشنل بنک آف پاکستان کے صدر سید آحمد اقبال اشرف اور کمانڈر گلگت بلتستان ثاقف ملک محمود نے افتتاح کیا۔

اس موقع پر ٹین کور کمانڈر لفٹنٹ جنرل ملک ظفر اقبال نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ آج پاکستان کیلے تاریخی دن ہے کہ آج پاکستان نے نیشنل بنک کی مدد سے اس تاریخی کام کو انجام دیا جسکے لیے نیشنل بنک آف پاکستان مبارک بادی کے مستحق ہے یہ اعزاز پہہلے انڈیا کو حاصل تھا لیکن اب پاکستان نے اس اعزاز کو حاصل کیا۔انہوں مزید کہا کہ سی پیک سے پاکستان بلخصوص گلگت بلتستان میں معاشی انقلاب آئے گا اور اس کا پہلا قافلہ گزشتہ ہفتے گلگت بلتستان سے گزارتے ہوئے گوادر تک پہنچ گئی انہوں نیایک سوال کے جواب میں کہا کہ ملک کی سلامتی کے لیے پاک فوج ہمہ وقت کسی بھی صورت حال سے نمٹنے کے لیے تیار ہے۔

khunjerab top ATM

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حافیظ الرحمن اور ٹین کور کمانڈر لفٹنٹ جنرل ملک ظفر اقبال ATMمشین کا افتتاح

اس موقع پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل بنک نے دنیا کے بلند ترین مقام خنجراب ٹاپ پرATMنصب کر کے پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر اعزاز دلایا۔اس ATMکے نصب کے بعد پاک چین تجارت سے منسلک افراد اور ملکی وغیر ملکی سیاحوں کو فائدہ ملے گا۔وزیراعلی نے سی پیک کے حوالے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت کسی بھی صوبے میں اکنامک زون نہیں بنا ہے سوائے بلوچستان گوادر کے گلگت بلتستان سمت دیگر صوبوں اسپیشل فزیبلٹی رپورٹ تیار ہو رہی ہے انشااللہ مارچ تک تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ بیٹھے گے۔ سی پیک کی مرحون منت ہے جس کی بدولت گلگت بلتستان کے عوام کو سب سے بڑا فائد 72ارب کے منصوبوں کی شکل میں وفاقی حکومت نے دیا ہے۔اس سے پہلے کسی حکومت نے اتنا بڑابجٹ دی اہے۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اس شاہراہ کو بارہ مہنہ نہیں کھولا جائے گا سی پیک کا مقصد پورا نہ ہو جائیگا جبکہ اس سال پاک چین بارڈر نومبر میں اختتام پر بند ہوگا تاہم آئندہ سال گلگت بلتستان حکومت اور سینکیاں صوبے کے ساتھ چند نکات پر معاہدے ہونے والے جس میں اس کے علاوہ دیگر اہم منصوبے شامل ہے۔ATMافتتاحی تقریب کے موقع پر دیگر عسکری قیادت کے علاوہ ، ضلعی انتظامیہ کے افسران کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

جی بی اسٹاف آپ کو گلگت بلتستان اور چترال کی تازہ ترین حالات حاضرہ سے باخبر رکھتے ہیں۔

Advertisement
Click to comment

خبریں

ہنزہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ

Published

on

ہنزہ (اسلم شاہ) بروقت واجبات کی عدم ادائیگی کے باعث محکمہ برقیات کے لیے ڈیزل کی سپلائی میں تعطل کے باعث ہنزہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ، جبکہ محکمہ پولیس ہنزہ کی جانب سے ادائیگیاں نہ ہونے کے باعث پٹرول پمپ مالکان نے محکمہ پولیس کو پٹرول کی ترسیل بند کردی۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ پولیس ہنزہ کی پٹرول پمپ کے مالکان کو 35لاکھ سے زائد کا رقم واجب الادا ہے جس کے باعث پٹرول پمپ مالکان نے محکمہ پولیس کو پٹرولیم مصنوعات کی ترسیل بند کردی ہے پٹرول پمپ کے انتظامیہ کا کہنا ہے محکمہ پولیس کی جانب سے ادائیگیوں میں مسلسل تاخیر کے باعث پٹرول کی مصنوعات کی ترسیل بند کردی گئی ہے محکمہ کی جانب سے کوئی موقف سامنا نہیں آیا ہے۔ محکمہ پولیس کو تیل کی ترسیل بند ہونے کی وجہ سے بہت سے اہم معملات میں مشکلات کا سامنا ہو سکتا ہے۔

پٹرول پمپ کے انتظامیہ کے مطابق محکمہ برقیات کی جانب سے ادائیگیوں میں تاخیر کے باعث محکمے کو مسلسل تیل کی فراہمی میں مشکلات کا سامنا ہے اور پمپ انتظامیہ کو تیل کی ترسیل میں بھی مشکلات کا پیدا ہو رہے ہیں، جبکہ دوسری طرف ہنزہ میں لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں بھی اضافہ ہوا ہے۔یاد رہے کہ ہنزہ میں موجود تین میں سے دو ڈیڑل جنریٹر ہی کام کر رہے ہیں۔

Continue Reading

خبریں

“مسگر پاور ہاؤس سے 15 جون سے قبل دو میگاواٹ بجلی فراہم کی جائے گی” چیف سکریڑی گلگت بلتستان کیپٹن (ر) خرم آغا

Published

on

Hunza Press Club members with Chief Secretary Gilgit Baltistan Khurram Agha

چیف سکریڑی گلگت بلتستان کیپٹن (ر) خرم آغا نے کہا ہے کہ ہنزہ کے مسائل کے حل کے لئے سنجیدہ اقدامات کررہے ہیں مسگر پاور ہاؤس سے 15 جون سے قبل دو میگاواٹ بجلی فراہم کی جائے گی جس سے ہنزہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں کمی آئیگی سکیل ایک سے نو تک کے ملازمین کے حوالے سے کمشنر گلگت ڈویژن کی سربراہی میں کمیٹی کام کررہی ہے آئندہ ملازمین کی بھرتیوں میں ہنزہ کے ساتھ ذیادتی برداشت نہیں کی جائے گی۔

ان خیالات کا اظہار چیف سکریڑی گلگت بلتستان کپٹین (ر) خرم آغا نے ہنزہ پریس کلب کے صدر رحیم اللہ بیگ کی قیادت میں ملنے والے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا مذید انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے تمام پریس کلبوں کے لئے گرانٹ دینے کے لئے پرپوزل پر کام ہورہا ہے بہت جلد تمام پریس کلبوں کو گرانٹ کی منظوری ہوگی بہت جلد ہنزہ آکر لوگوں سے ملونگا گلگت بلتستان کے پاس محدود وسائل ہیں ہمیں محدود وسائل میں رہ کر کام کرنا ہوتا ہے اس لئے عوام کے تمام مطالبات حل نہیں کئے جا سکتے گوجال سب ڈویژن اور شناکی تحصیل پر انتظامی طور پر کام ہورہا ہے ہنزہ ضلعے کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

Continue Reading

خبریں

“ہنزہ میں بجلی کے بحران کاذمہ دار پیپلز پارٹی ہے” وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن

Published

on

گلگت (جی بی اردو) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ ہنزہ میں بجلی کے بحران کاذمہ دار پیپلز پارٹی ہے، حسن آباد اور مایون پاور ہاؤس کے ٹی جی سیٹ پر ایک سال سے عدالتوں کے ذریعے حکم امتناعی لے رکھے ہیں جس میں پیپلز پارٹی کی صوبائی قیادت ملوث ہے جس کی وجہ سے ان پاور ہاؤسز پر کام رکا ہوا ہے ہم نے ہنزہ کے حوالے سے جو بھی اعلانات کئے ہیں ان سبپر عمل درآمد ہوگا جلد ہنزہکا دورہ کرکے گوجال سب ڈویژن اور شیناکی تحصیل کا افتتاح کرونگا.

اس کے علاوہ ہنزہ میں بجلی کے بحران کے سلسلے میں کام کیا جا رہا ہے ، مسگر پاور ہاؤس پر ہم خصوصی توجہ دے رہے ہیں بہت جلد مسگر پاور ہاؤس سے بجلی فراہم کی جائیگی اس سال گرمیوں میں ہنزہ کے اندر خاطر خواہ لوڈ شیڈنگ میں کمی آئیگی اس وقت ہنزہ میں تھرمل جنریٹرز کے ذریعے ہنزہ کو بجلی فراہم کی جا رہی ہے جس پر کروڑوں روپے لاگت آرہی ہے ،عطا آباد پاور ہاؤس پر چار میگاواٹ کیلئے 25کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں جبکہ اس منصوبے کیلئے مزید پچاس کروڑ روپے درکار ہیں ہم کوشش کررہے ہیں کہ جلد ہم پچاس کروڑ روپے بھی لا سکیں.

اس منصوبے پر 75کروڑ روپے لاگت آرہی ہے عطاء آباد 32.5 میگاواٹ کیلئے بھی ہم وفاقی حکومت سے مسلسل رابطے میں ہیں کیونکہ یہ پی ایس ڈی پی کے فنڈ سے بنناہے جس کی منظوری مل چکی ہے اب اس کیلئے فنڈ مہیا کرنا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ہنزہ پریس کلب کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہنزہ کی تعمیر و ترقی ہماری اولین ذمہ داری ہے کیونکہ ہنزہ ہمارا چہرہ ہے.

ہنزہ پریس کلب کی جانب سے علی احمد نے وزیر اعلیٰ کو ہنزہ کے مسائل کے بارے میں آگاہ کیا جس میں کے کے ایچ کمپنسیشن ، سکیل1 تا9 بین الاضلاعی تقرریاں ، بجلی کے بحران اور دیگر مسائل سے آگاہ کیا جبکہ ہنزہ پریس کلب کے صدر رحیم اللہ بیگ نے ہنزہ پریس کلب کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا وفد میں سینئر نائب صدر اکرام نجمی اور جوائنٹ سیکریٹری اسلم شاہ شامل تھے اور اس ملاقات میں رکن گلگت بلتستان کونسل ارمان شاہ نے خصوصی طور پر شرکت کی اور ہنزہ کے مسائل اور ہنزہ میں صحافیوں کو درپیش مسائلسے وزیر اعلیٰ کو آگاہ کیا

Continue Reading

مقبول تریں