Connect with us

صحت

سیڈو نے سموک فری ہنزہ مہم کا آغاز کر دیا

اسلم شاہ

Published

on

ہنزہ (اسلم شاہ) گلگت بلتستان حکومت اور غیر سرکاری ادارہ ادارہ سیڈو کی جانب سے سموک فری ہنزہ (تمباکو سے پاک ہنزہ) کا باقاعدہ آغاز محکمہ تعلیم سمیت درجنوں سرکاری اور غیر سرکاری اداروں نے اس مہم میں شرکت اپنے دفاتر اور گردونواح کو تمباکو اور تمباکو کے تمام اشیاء پر پابندی کا اعلان کیا۔

مہم کا آغاز ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکشن محمد شریف نے ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن آفس کو سموک فری قرار دیکر کیا۔ اس موقع پر گورنمنٹ بوائز ہائی سکول علی ہنزہ میں سیڈو کے ضلع ہنزہ کے کوآرڈینیٹر اسلم شاہ نے ایک آگاہی پروگرام کے بعد اس مہم کے عملی کام کا آغاز کیا۔سموک فری پروگرام میں ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکشن آفس، بوائز ماڈل ہائی سکول علی آباد، سیڈنا سکول اینڈ ڈگری کالج، ہنزہ پبلک سکول اینڈ ڈگری کالج علی آباد ہنزہ، اسکائی ہائراسکینڈری سکول علی آباد ہنزہ،نائب تحصیل دار آٖفس علی آباد ہنزہ، ٹاون منیجمٹ کریم آباد ہنزہ، بلتت یوتھ آرکنائزیشن کریم آباد ہنزہ کے علاوہ کئی اداروں نے اس مہم میں باقاعدہ شرکت کا اعلان کیا اور عملی طور پر تمباکو نوشی سے کی ممانیت کے اسٹیکرز اور اشتہارات اپنے اپنے آفس میں آویزاں کئے۔

گلگت بلتستان حکومت اور غیر سرکاری ادارہ ادارہ سیڈو کی جانب سے سموک فری ہنزہ (تمباکو سے پاک ہنزہ) کا باقاعدہ آغاز محکمہ تعلیم سمیت درجنوں سرکاری اور غیر سرکاری اداروں نے اس مہم میں شرکت اپنے دفاتر اور گردونواح کو تمباکو اور تمباکو کے تمام اشیاء کی اشیاء پر پابندی کا اعلان کیا۔مہم کا باقاعدہ آغاز ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکشن محمد شریف نے اپنے دفاتر کو سموک فری قرار دے کر کیا۔اس موقع پر انہوں نے گلگت بلتستان حکومت، محکمہ تعلیم اور سیڈو کی اس اقدام کو سہراتے ہوئے کہا کہ نوجوان نسل کو اس زہر سے دور رکھنے کے لیے گلگت بلتستان حکومت اور محمکہ تعلیم کی یہ کوششیں بہت اہم اور بروقت ہیں تعلیمی ادارے ہی معاشرے میں مثبت تبدیلی لا سکتی ہیں اور اس مہم کو پورے ہنزہ کے ہر ایک ادارے میں متعارف کروانا چاہیے۔

سموک فری ہنزہ مہم کا باقاعدہ بوائز ماڈل ہائی سکول علی آباد ہنزہ ہو ا، اس دوران ہیڈ ماسٹر محمد اسماعیل نے تمباکو نوشی کے نقصانات سے طلبا کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ جن طلباء کے والدین تمباکو نوشی کی عادت میں مبتلا ہیں نہ صرف وہ اپنا نقصان کرتے ہیں بلکہ وہ اپنے بچوں کے صحت کو بھی خراب کرتے ہیں انہوں نے طلباء کو اپنے والدین کو منشیات سے دور رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔اس آگاہ مہم میں سیڈو کے ضلعی کواڈینٹر اسلم شاہ نے اس مہم کے اغراض سے طلباء کو آگاہ کیا۔

اس مہم کے دوران سیڈنا سکول اینڈ ڈگری کالج کے پرنسپل خانم امان،ہنزہ پبلک سکول ایند ڈگری کالج علی آباد کے پرنسپل اسکائی ہائر اسکینڈری کے پرنسپل نائب تحصیل دار فرمان کریم، بلتت یوتھ آرگنائزیش کے صدر منصور عالم،بلتت ٹاون منیجمنٹ کے صدر رحمت کریم نے اپنے آفس میں سگریٹ نوشی کے ممانیت اسٹیکراور اشتہار لگا کر مہم میں شمولیت کی۔

اس موقع پر ہنزہ سول سروسز کے نمائندوں کا کہناتھا کہ تمباکو نوشی کے خلاف موجودہ قوانین پر ضلعی انتظامیہ کی جانب سے عمل درآمد کروانے کی اشد ضرورت ہے۔

اسلم شاہ کا تعلق ضلع ہنزہ سے ہے اور وہ ہنزہ پریس کلب کے رکن اور ماہنامہ کنجوت ٹوڈے میگزین کے ایڈیٹر بھی ہیں

Advertisement
Click to comment

پاکستان

آکا پاکستان اور گلگت بلتستان حکومت کے مابین سنٹرل ہنزہ میں پانی کے منصوبے کے لیے شراکت داری کا معاہدہ

جی بی اسٹاف

Published

on

آکا پاکستان اور گلگت بلتستان گو رنمٹ کے مابین سنٹرل ہنزہ کے لیے پانی کے منصوبے کے لیے شراکت داری کے معاہدہ

آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ، پاکستان ،گو رنمٹ آف گلگت بلتستان اور ہنزہ کی ضلعی انتظامیہ کے مابین سینٹرل ہنزہ کے لیے پانی کی فراہمی کے ایک بڑے منصوبے کے لیے شراکت داری کے معاہدے پر دستخط کئے گئے۔

آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ، پاکستان نے گو رنمٹ آف گلگت بلتستان کے ساتھ شراکت داری کی یاداشت پر دستخط کیے جس کے تحت عطاآباد جھیل سے سینٹرل ہنزہ کے ایک بڑے حصے کوگھر یلو اور تجارتی مقا صد کیلے پانی کی فراہمی کرنے کے لیے فز یبلٹی اسٹڈ ی Feasibility studyکی جائے گی. اس Feasibility study کے تحت جہاں آبادی اور سیاحوں کی تعداد میں اضافے کو مدنظر رکھا جائے وہاں اس سکیم کے ا نفراسکٹچر کو قدرتی آفات سے محفوظ رکھنے کے لیے درکار اسٹڈی بھی کی جائے گی۔ اس سلسلے میں ہنزہ میں بروز بدھ، 7 اکتوبر2020 کو گو رنمٹ آف گلگت بلتستان،ضلعی انتظامیہہنزہ اور آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ کے مابین اس مطالعے کے لیے یاداشت پر دستخط ہوئے۔ جس میں حکومت گلگت بلتستان کی جناب سے گلگت بلتستان کے ایڈشینل چیف سکریٹری جناب سید ابرار حسین شاہ، جناب فیاض آحمد،ڈپٹی کمشنر ہنزہ، جناب نواب علی خان، چیف ایگزیکٹو آفیسر، آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ پاکستان، سوسائٹی کے نمائندوں اور اے۔کے۔ڈی۔این کے لیڈرز نے شرکت کی۔

سینٹر ہنزہ کو پانی کی شدید قلت کا سامنہ ہے کیونکہ اس کی بیشتر آبادی پانی کی ضرورت کو دو گلشیز اور ان سے جڑے ندیاں (حسن آباد نالے اور التر نالے) سے پورا کر رہی ہے اور ان گلشیز پر حالیہ برفانی جھیل بنے اور ا ن کے پھٹنے کے واقعات نے پینے کے پانی کی عدم دستیابی اور دیگر معاشرتی انفراسٹر یکچر پر بہت اثر ڈالا ہے۔ جبکہ گھریلو استعمال کے پانی کی شدید قلت اور دیگر تجارتی سرگرمیوں میں تیز رفتار نشونما خصو صاً سیاحت میں اضافے کی وجہ سے پانی کی قلت کا یہ معاملہ اب شدت اختیار کر گیا ہے۔ لہذا آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ اپنی تکنیکی صلاحیتوں کو استعمال کر تے ہوے ان خطرات کے تشخیص کرنے میں گو رنمٹ آف گلگت بلتستان اور ہنزہ انتظامیہ کو Feasibility Study کرنے اور واٹر سپلائی ڈیزئن کرنے میں مدد فراہم کر رہی ہے۔

اس موقع پر گلگت بلتستان کے ایڈشینل چیف سکریٹری جناب سید ابرار حسین شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان کی حکومت علاقے اور اس کی عوام کی ترقی کے لے ہمیشہ گامزن ہے۔ ہم آغاخان ڈولپمنٹ نیٹ ورک کا شکر گزار ہیں کہ وہ متعد ترقیاتی منصوبوں کا ادراک کر رہی ہے جس میں غربت کو کم کرنے اور کمیو نٹی کو با اختیار بنانے کے پروگرامزشامل ہیں۔ ہم بہت سے ترقیاتی اقدامات خصوصاً موسیماتی تبدیلیوں اور گلگت بلتستان کے دور دراز علاقوں تک پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے اُمور کو حل کرنے کے لیے گو رنمٹ آف گلگت بلتستان کی طرف سے آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ کے تعاون کو سہراہتے ہیں۔

اپنے خطاب میں جناب فیاض آحمد،ڈپٹی کمشنر ہنزہ،نے کہا ہے اس ترقیاتی پراجیکٹ میں آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ کے ساتھ تعاون سے تجارت گاہوں،ہیلتھ سینٹر اور دیگر سکولوں اور تقر یبا 5500 گھرانوں کو صاف پانی ی فراہمی کو یقینی بنائے گی جس میں ہنزہ کے آٹھ بستیاں التت، فیض آباد، گنیش، گریلت، دوکھن اور علی آباد کے علاقو ں کو فائدہ ہو گا۔ اس Feasibilty Study کے تحت نہ صرف پینے کے صاف پانی کا مسئلہ حل کیا جائے گا بلکہ سینٹرل ہنزہ میں سیا حت کو فروغ ملے گی۔

جناب نواب علی خان، چیف ایگزیکٹو آفیسر آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ پاکستان اپنے تاثرات میں کہا کہ حکومت پاکستان اور اے۔کے۔ ڈی۔ این پاکستان کی ترقی اور یہاں کی عوام کی معیار زندگی کو بڑھانے کے لیے ہمیشہ کوشاں ہے۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ اے۔ کے ۔ڈی۔ این، حکومت کی جانب سے تمام تر تعاون کا شکر گزار ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ تین دہائیوں میں ،آغاخان ایجنسی فارہا بیٹاٹ پاکستان نے پانچ لاکھ 500,000لوگوں کو پینے کے صاف پانی کی بنیادی سہولت فراہم کیا ہے جس سے نہ صرف لوگوں کی صحت اچھی ہوتی ہے بلکہ معاشی ترقی پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوئے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ خواتین اور لڑکیوں کا دور دراز جگہوں سے پانی لانیکی مشقت میں خاطر خواہ کمی ہوئی ہے۔

Continue Reading

خبریں

کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن بچوں کو تمباکو نوشی کی فراہمی پر عائد پابندی کی پاسداری کرے گی

اسلم شاہ

Published

on

کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے عہداداران اور ممبران کو سیڈو گلگت بلتستان

ہنزہ (اسلم شاہ) کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن اپنے ممبران کو انسداد تمباکو نوشی کے اصولوں پر عمل درآمد کرتے ہوئے بچوں کو تمباکو نوشی کی اشیاء کی فراہمی پر عائد پابندی کی پاسداری کرے گی۔ کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کابینہ اور ممبران۔

سیڈو گلگت بلتستان اور حکومت گلگت بلتستان کی جانب سے قوانین پر عمل درآمد کروانے اور انسداد تمباکو ایکٹ کی آگاہی سیشن کا انعقاد کیا گیا۔ سیشن میں انسداد تمباکو ایکٹ 2020 کی تفصیلات سے کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے ممبران کو آگاہ کیا گیا اور انسداد تمباکو ایکٹ 2020 کی کاپی آگاہی کے لیے فراہم کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے جنرل باڈی میٹنگ کے موقع پر سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے سیڈو گلگت بلتستان کے ہنزہ کے نمائندے کی جانب سے کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے کابینہ اور ممبران کے لیے انسداد تمباکو ایکٹ کے متعلق ایک آگاہی سیشن کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پر ایکٹ کی اہم نکات کی وضاحت کی گئی ہے او انسداد ر تمباکو ایکٹ کے متعلق سوالات کے جوابات دئے گئے .

کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے عہداداران اور ممبران کو سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے انسداد تمباکو ایکٹ 2020 کے معلق آگہی سیشن میں ایکٹ کی کاپی اور بروشرز پیش کیے جا رہے ہیں
کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے عہداداران اور ممبران کو سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے انسداد تمباکو ایکٹ 2020 کے معلق آگہی سیشن میں ایکٹ کی کاپی اور بروشرز پیش کیے جا رہے ہیں

اس موقع پر ایگزیکٹیو کمیٹی کے ممبران نے اس مہم کو سہراتے ہوئے کہا کہ اس مہم کے ذریعے نئی نسل کو تمباکو نوشی جییے لعنت سے دور رکھنے میں مدد ملی گی۔اس موقع پر کابینہ کے ارکان نے اپنے ممبران پر انسداد تمباکو ایکٹ پر عمل درآمد کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ تمام ممبران کو ان قوانین پر عمل درآمد کرکے اپنے آپ کو تادیبی کاروائیوں سے دور رکھیں اور معاشرے میں ایک مثبت کردار ادا کریں۔

اس موقع پر کریم آباد بزنس ایسوسی ایشن کے عہداداران کو بروشرز اور انسداد تمباکو ایکٹ کی کاپی فراہم کی گئی تاکہ اس کا مطالعہ کرکے اپنے ممبران کو آئندہ میٹنگ میں آگہی فراہم کی جاسکے۔

Continue Reading

خبریں

گلگت، ہنزہ، نگر اور غذر میں انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کی مہم جاری

رحیم امان

Published

on

امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ

ہنزہ (رحیم امان) ہنزہ میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں آپنا مثبت کردار ادا کریں گے، نوجوان قوم کا مستقبل ہیں اور قوم کی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے اپنا بھر پو رحصہ ڈالیں گے۔ سیڈو گلگت بلتستان کی اس مہم میں ضلعی انتظامیہ بھر پو رساتھ دے گی۔ امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ
حکومت گلگت بلتستان اور سیڈو گلگت بلتستان کا مشترکہ مہم تمباکو سے پاک گلگت بلتستان کے تحت گلگت ڈویژن کے چار اضلاع ضلع گلگت،ضلع ہنزہ،ضلع نگر، اور ضلع غذر میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے محفوظ رکھنے اور انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے کے لیے جاری مہم ہے۔

اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر علی آباد ہنزہ سے ایک اہم میٹنگ کا انعقاد ہوا،اس موقع پر امیر تیمور اسسٹنٹ کمشنر علی آباد ہنزہ نے کہا کہ ہنزہ میں کم عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے انسداد تمباکو نوشی کے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں آپنا مثبت کردار ادا کریں گے، نوجوان قوم کا مستقبل ہیں اور قوم کی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے اپنا بھر پو رحصہ ڈالیں گے۔ سیڈو گلگت بلتستان کی اس مہم میں ضلعی انتظامیہ بھر پو رساتھ دے گا، اور متعلقہ قوانین کی پاسداری کے لیے ضروری اقدامات اُٹھائے جائے گے۔

اس موقع پر سیڈو گلگت بلتستان کی جانب سے اسلم شاہ ڈسٹرکٹ کواڈینیٹر نے مہم کے اغراض و مقاصد سے ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ عمر بچوں کو تمباکو نوشی سے دور رکھنے کے لیے گلگت بلتستان حکومت اور سیڈو گلگت بلتستان کی مشترکہ کوششوں گلگت ڈویژ ن کے چاروں اضلاع میں جاری ہے، سیڈو گلگت بلتستان کی کوششوں کے باعث گلگت بلتستان اسمبلی نے انسداد تمباکو ایکٹ پاس کیا ہے اور گورنر گلگت بلتستان کی ڈستخط کے ساتھ ایکٹ منظور ہو کر گزٹ آف پاکستان میں شائع ہو کر باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کرچکا ہے۔اس موقع پر انہوں نے ہنزہ میں اس مہم کے حوالے ڈپٹی کمشنر ضلع ہنزہ کے زیر نگرانی قائم کردہ انسداد تمباکو ٹاسک فورس کے بارے میں بھی آگا ہ کیا۔

یاد رہے کہ انسداد تمباکو ایکٹ گلگت بلتستان کے تحت گلگت بلتستان میں ا ٹھارہ سال سے کم عمرکے بچوں کو کسی بھی قسم کے تمباکو نوشی سے متعلق اشیاء کی فروخت و استعمال پر پابندی عائد ہے، اور کسی بھی تعلیمی اور صحت کے ادارے کے اطراف میں دو سو میٹر کے فاصلے تک تمباکو نوشی سے متعلق کاروبار کرنے اور تمباکو نوشی کرنے پر پابندی ہوگی،اور تمباکو نوشی کے اشیاء کا کاروبار کرنے والے دکانداروں کے لائسنس حاصل کرنا لازمی ہوگا۔

Continue Reading

مقبول تریں