Connect with us

خبریں

وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت بلتستان کے 36 ڈاکٹروں کے کنٹریکٹ میں ایک سال کی توسیع کردی

جی بی اسٹاف

Published

on

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے صوبے میں خدمات سرانجام دینے والے 36 ڈاکٹروں کے کنٹریکٹ میں مزید ایک سال کی توسیع دیدی۔

واضح رہے کہ کنٹریکٹ میں توسیع دی جانے والے 36 ڈاکٹرز گلگت بلتستان کے مختلف اضلاع میں بحیثیت میڈیکل آفیسرز ، ڈینٹل آفیسرز ،گائینی کالوجسٹ اور بچوں کی علاج و معالجے کے حوالے سے اپنی خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔

گلگت بلتستان کے ایک سو سے زائد کنٹریکٹ، ڈاکٹروں نے مستقل نہ ہونے کی صورت میں اجتماعی استعفے کی دھمکی دے رکھی ہے، کنٹریکٹ ڈاکٹرز کئی ماہ سے احتجاج کر رہے تھے۔

جی بی اسٹاف آپ کو گلگت بلتستان اور چترال کی تازہ ترین حالات حاضرہ سے باخبر رکھتے ہیں۔

Advertisement
Click to comment

خبریں

گلگت سکردو روڈ پر کوسٹر حادثے میں 25 مسافر جان بحق

جی بی اسٹاف

Published

on

راولپنڈی سے سکردو جاتے ہوئے مسافر کوسٹر کو روندو استک نالہ کے قریب حادثہ پیش، تمام 25 مسافر جانبحق۔ کوسٹر موڈ کاٹتے ہوئے دریا میں جا گرا۔ ابتدائی طور پر حادثے کے نتیجے میں 20 افراد جانبحق جبکہ 5 افراد شدید ذخمی ہوئے تھے تاہم 5 شدید زخمی مسافر بھی جان کی بازی ہار گئے۔ ذخمیوں کو ابتدائی طبی امداد دینے کیلئے روندو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کر دیا گیا تھا۔

زرائع کے مطابق کوسٹر انچن انڈس ٹریول کی ہے جو راولپنڈی سے سکردو جا رہی تھی۔ پیر کی صبح روندو استک کے قریب موڈ کاٹتے ہوئے حادثے کا شکار ہوئی۔ لوکل ٹرانسپورٹ کمپنی نے مسافروں کی لسٹ جاری کر دی ہے۔ پاک فوج کی امدادی ٹیم اور ہیلی کاپٹر نے جائے حادثہ پر ریسکیو میں حصہ لیا۔

Continue Reading

جرم

سی ٹی ڈی کاروائی میں گن پوائنٹ لوٹنے والا بین الصوبائی گروہ گرفتار

جی بی اسٹاف

Published

on

سی ٹی ڈی اپریشنل ٹیموں کی کامیاب کاروائی, شام اوقات میں گن پوائنٹ پر شہریوں اور مسافروں کو لوٹنے والے بین الصوبائی گروہ گرفتار. گروہ میں دیامر، نگر، گلگت, سکارکوی اور ڈومیال کے لڑکے شامل ھیں جنکی نشاندہی پر دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کے لیئے پولیس ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔

سی ٹی ڈی اپریشنل ٹیموں کی کامیاب کاروائی, شام اوقات میں گن پوائنٹ پر شہریوں اور مسافروں کو لوٹنے والے بین الصوبائی گروہ گرفتار. گروہ میں دیامر، نگر، گلگت, سکارکوی اور ڈومیال کے لڑکے شامل ھیں جنکی نشاندہی پر دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کے لیئے پولیس ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔

گرفتار گروہ سے نقدی, موبائل فون، اسلحہ, اور دیگر قیمتی سامان برآمد کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔ ابتدائی تفتیش میں گرفتار ملزمان نے سنسنی خیز اور دلچسپ انکشافات کردیئے ھیں۔

بین الصوبائی گروہ کا حالیہ دنوں نگر چھلت میں گن پوائنٹ پر شہریوں اور مسافروں کو لوٹنے کیس میں ملوث ھونیکے امکانات ھیں۔ گروہ نے نسیم سنیما چوک رمضان ھوٹل کی گلی میں موجود تندورچی سے نقدی اور موبائل, عسکری بینک گلی کے تندورچی سے نقدی اور موبائل فون, کنوداس ایریا میں گن پوائنٹ پر دوکاندار سے نقدی اور موبائل فونز, جوٹیال ذوالفقار اباد روڈ میں گن پوائنٹ کے ذریعے نقدی اور دیگر قیمتی سامان, جوتل سوسائٹی دفتر سے ڈکیتی کے ذریعے ھزاروں مالیت کے سامان اور نقدی اور گلگت کے دیگر ملحقہ علاقوں سے بھی اسلحے کی نوک پر درجنوں شہریوں اور مسافروں سے لاکھوں مالیت کے سامان اور نقدی چھین کر فرار ھوتے تھے۔

اے آئ جئ سی ٹی ڈی اپریشنل گلگت بلتستان حفیظ الرحمن

گروہ سے تفتیش شروع کردیا گیا ھے جب کہ گروہ میں دیامر,نگر,گلگت, سکارکوی, ڈومیال کے لڑکے شامل ھیں جنکی نشاندہی پر دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کے لیئے پولیس ٹیمیں تشکیل دیدیں ھیں۔ سی ٹی ڈی اپریشنل ٹیم نے,سب انسپکٹر شیر عالم اور سب انسپکٹر سہراب احمد کی سربراہی میں کریک ڈاون کرکے چار روز میں آٹھ مفرور خطرناک اشتہاری ملزمان کو گرفتار کر کے متعلقہ تھانوں کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

دونوں اپریشنل ٹیموں کی بہترین کارکردگی پر,,آئ جی پی گلگت بلتستان ڈاکٹر مجیب الرحمان نے نقدی سمیت A کلاس سرٹیفکیٹ جبکہ دونوں آپریشنل ٹیموں کو نقد 10 ھزار روپیے سمیت تھری کلاس سرٹیفکیٹ دینے کا اعلان کیا ہے۔

شہریوں کا بھی فرض بنتا ھیکہ وہ سیکورٹی اداروں کے ساتھ مکمل تعاون کریں تاکہ بہتر امن وامان اور عوام کے جان ومال کی حفاظت یقینی بنانے کے لیئے مزید اقدامات اٹھائیں گے, اے آئ جئ سی ٹی ڈی اپریشنل گلگت بلتستان حفیظ الرحمن کا روزنامہ اوصاف کو خصوصی انٹرویو.

Continue Reading

خبریں

کوہستان میں کے کے ایچ پر ملک آفرین کی گرفتاری کے خلاف احتجاج اور کھلی دھمکیاں

جی بی اسٹاف

Published

on

Kohistan 24/7

کوہستان کے میرغزن سکندر اور انجینئر بخت بلند خان اور دیگر مظاہرین نے ہندرپ کیس کے ماسٹر مائنڈ ملک آفرین کو فوری طور پر رہا نہ کرنے کی صورت میں گلگت بلتستان کے عوام اورخُصوصاً اسماعیلیوں کو شاہرہ قراقرم اور کوہستان سے گزرنے نہ دینے کی دھمکی دی۔ اس کے ساتھ ہی مظاہرین نے کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی ذمہ دار ڈی آئی جی گلگت بلتستان کو ٹھرایا۔

ملک آفرین کو عدالتی حکم پر گرفتار کیا گیا تھا اور ابھی ریمانڈ پر ہے۔ ملک آفرین کو گلگت بلتستان کے ضلع غذر کے علاقے ہندرپ سے گزشتہ سال چار افراد کو اغواء کرانے کے جرم میں گرمتار کیا گیا تھا۔

گلگت بلتستان کے ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے اس شرانگیز واقعے کی مذمت کی ہے اور پی ٹی آئی حکومت سے فوری کاروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

Continue Reading

مقبول تریں