Connect with us

چترال

چترال میں برفانی تودہ گرنے سے دو بھائیوں سمیت چار افراد جاں بحق

جی بی اسٹاف

Published

on

چترال میں برفانی توداہ

خیبر پختونخواہ کے سب سے بڑے ضلع چترال میں بمیں ببرفانی تودہ گرنے سے کم سے کم چار افراد ہلاک ہوئے ہیں. ڈپٹی کمشنر چترال خورشید عالم کے مطابق چار لاشیں ملبے تلے سے برآمد کردی گئی ہیں. چترال کے یونین کونسل ششیکوہ کے ایک علاقے گورینگول میں اتوار کی صبح 3:00 بجے یہ واقع پیش آیا.

اسسٹنٹ کمشنر دروش عبدال عبداللہ خان نے ذاتی طور پر لاشوں کو نکالنے کی کوششوں میں حصہ لیا. چترال لیویز، مقامی پولیس،ریسکیو 1122 اہلکاروں اور کمیونٹی رضاکاروں نے زخمیوں اور لاشوں کو نکالنے میں کوشاں رہے. برف باری کے باعث زخموں کو ہسپتال پہنچانے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا.  افوج پاکستان نے نے ریسکیو کے لئے ایک ہیلی کاپٹر بھی فراہم کی تھی.

چترال کے علاقے دروش میں گزشتہ منگل سے بھاری برفباری ہو رہی تھی.

ڈی سی چترال نے ایک پریس ریلیز میں کہا یے کہ گورن گول گاؤں میں ایک درجن سے زیادہ لوگ برف کے نیچے پھنسے ہوئے تھے.

خیبر پختون خواہ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے ایک ترجمان سیما ایوب خان نے بتایا کہ آٹھ کے قریب گھر برفانی تودے کی زد میں آ گئے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ چھے افراد کو بچایا جا چکا ہے۔

کم از کم 10 افراد کو محفوظ طریقے سے برفانی تودے کے نیچے سے نکال دیا گیا ہے جو رات کو ہی تودے کے نیچے پھنس گئے تھے.

جاں بحق افراد کے نام:

مومن ولد اکٹیس خان، عامرزادہ ولد استانیس خان، سعد مالک ولد بہادر اور عثمان ولد گل محمد.

Read this post in English

Advertisement
Click to comment

مقبول تریں